“کامیابی بہترین انتقام ہے “۔۔۔۔تحریر: نعیم ثاقب

کسی دانا کا قول ہے کہ “مرد کا امتحان عورت سے اور عورت کا امتحان پیسے سے ہوتا ہے “
آپ نے کبھی ٹریور اینجلسن کا نام سنا ہے بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ یہ میگھن مارکل کا پہلا شوہر تھا پرنس ہیری سے میگھن کی تاریخی شادی اس کی پہلی شادی نہیں تھی اپنے صلی شہزادے سے پہلے میگھن مارکل نے ٹریور اینجلسن کے ساتھ 2011 میں جمیکا میں شادی کی ۔شادی کی اس تقریب میں لگ بھگ 100 افراد شریک ہوئے سات سال بعد پھر ایک ایسی ہی شادی ہوئی لیکن اب دولہا ایک شہزادہ تھا اور اس شادی کو دیکھنے والے پوری دنیا تھی اپنی تقریبا 18 ماہ قائم رہنے والی شادی کے خاتمے کے بعد میگھن مارکل حوصلہ چھوڑ دیتی اور فلموں میں کچھ چھوٹے موٹے رول کرتی رہتی لیکن اس نے اپنے درد کو اپنی توانائی بنایا اور آگے بڑھتی گئی۔
حضرت علی کا فرمان ہے
“اپنے نفس کو ہر قسم کی کم مائیگی اور پستی سے بلند رکھو خوایہ پستی و حقیر ہونا تمہیں پسندیدہ اشیاء تک پہنچا دے ہی کیوں نہ دے کیونکہ تم جو عزت نفس گنواؤ گے اس کا کوئی بدل نہیں مل سکتا اور خبردار کسی کے غلام نہ بن جانا اللہ نے تمہیں آزاد پیدا کیا ہے “بعض اوقات لوگ ہمارے ساتھ توہین آمیز رویہ اختیار کرتے ہیں اور اکثر اوقات نفرت کی حد تک چلے جاتے ہیں دھتکارتے اور کمتر سمجھتے ہیں آپ کی تذلیل کرتے ہیں آپ کے پاس ایک راستہ تو یہ ہوتا ہے کہ آپ بھی جوابا” ساری زندگی ان سے نفرت کرتے رہں یہ بدلہ عام اور ناکام لوگوں کا دوسرا طریقہ اور بہترین انتقام آپ کی بے پناہ کامیابی ہے اتنا کامیاب بنیں اتنی بلندی پر پہنچ جائیں کہ آپ کو چھوڑنے اور حقیر سمجھنے والے پچھتائیں اور آپ سے ملنے کے لیے ترسیں ۔
آپ اپنے ماضی اور خاندانی پس منظر کی وجہ سے کبھی چھوٹے نہیں ہوتے۔صرف آپ کے حال اور مستقبل سے لوگوں کو غرض ہوتی ہے لوگوں کو آپ کے مقام کا پتہ ہونا چاہیے نہ کہ آپ کو چیخ چیخ کر بتانا پڑے کہ آپ کون ہیں اور اگر خاندانی پس منظر اور ماضی کی بنیاد پر ہی پرنس ہیری اپنے لیے شہزادی کا انتخاب کرتا تو وہ میگھن مارکل ہرگز نہ ہوتی میگھن مارکل اپنے ماضی اور پس منظر کو چھوڑکر قابل رشک شخصیت بنی شوبز کی دنیا میں بطور اداکارہ میگھن کی آمد کو بہت دھماکے دار نہیں کہا جاسکتا اس نے اپنے کام کا آغاز ایک معمولی کردار سے کیا۔ چھوٹے اور معمولی آغاز کو حقیر مت سمجھیں مگر ساری عمر چھوٹے مت رہیں غریب پیدا ہونا کوئی بری بات نہیں مگر ساری عمر غریب رہنے کے قصوروار آپ خود ہیں بڑا سوچیں ،مسلسل جدوجہد کریں اور آہنی ارادوں کے ساتھ آسمان کی بلندیوں کو چھونے کا عزم کریں ۔
مایوسی اور ناکامی کے تیل سے ہی کامیابی کا دیا جلتا ہے ۔زندگی میں ایسے موڑ آتے ہیں جب ہر طرف اندھیرا نظر آتا ہے مایوسی اور بے یقینی کا سامنا کرنا پڑتا ہے یاد رکھیں کامیابی مفت میں نہیں ملتی اس کی ایک قیمت ہوتی ہے جو ہر کامیاب انسان کو چکانا پڑتی ہے پھولوں کو چومنے کے لئے پہلے کانٹوں سے الجھنا پڑتا ہے ماضی کی مشکلات کا سوچ کر حال اور مستقبل کے امکانات کو ضائع مت کریں یقین رکھیں اور آگے بڑھے ۔واصف علی واصف کا قول ہے “مشکل وقت کوشش نہیں یقین سے نکلتا ہے “ اللہ کی دی ہوئی زندگی سے پیار کریں مثبت رویہ اپنائیں کوئی ٹھوکر لگے تو گرے نہ رہیں اٹھ کر کپڑے جھاڑیں اور زندگی کو نئے عزم کے ساتھ جینے کا ارادہ کریں ۔میگھن مارکل نے طلاق کے بعد بچوں اور کمزور عورتوں کی آواز بننے کا فیصلہ کیا اور اسی جذبے نے شہزادے کے دل میں آگ لگا دی نرم رویہ اور مثبت طرز عمل کامیابی کی پہلی سیڑھی ہے۔
کامیابی اور محبت کے حصول کے کیے عمر کی کوئی قید نہیں اس کی بڑی مثال چھتیس سالہ میگھن کی چونتیس سالہ ہیری سے شادی ھے اور یہ بھی حقیقت ہے کہ حالات ہمیشہ ایک جیسے نہیں رہتے میگھن نے شہزادی بننے سے تیئس سال پہلے بکنگھم پیلس کے سامنے تصویر بناتے شاید ہی سوچا ہو کہ وہ ایک دن شہزادی بن کر اسی محل میں آ گئی ۔زندگی کچھ ایسے لوگ بھی ہمسفر بن جاتے ہیں جو آپ کی قدر نہیں کرتے اصل میں وہ خود آپ کے ساتھ کے اہل نہیں ھوتے پھر ایک وقت آتا ھے کہ آپ کا ان کے ساتھ رہنا مشکل ھو جاتا ھے۔ جو تعلق آپ کی قدر نہ کرے اسے چھوڑ دیں ۔ کسی بھی تعلق کے ختم ھونے آپ کی زندگی ختم نہیں ھوتی۔ آج میگھن کا شوہر اس کو دیکھ کر کیا سوچتا ھوگا کہ اس نے کس ہیرے کو چھوڑا ھے اور یہی پچھتاوا پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کی سابقہ بیوی کو بھی ھوگا کہ اگر وہ عمران خان کی بیوی ھوتی تو آج پاکستان کی خاتون اوّل ہوتی۔
کامیابی اسی لمحے سے شروع ھو جاتی جب آپ اسے حاصلُکرنے کا مصمم ارادہ کر لیتے ہیں ۔ اپنی زندگی کے ساتھ آگے بڑھیں جو لوگ آپ سے دور جانا چاہیں انہیں جانے آپ کا مقدر اور خوشی کسی سے مشروط نہیں ۔ چیزیں اور لوگ خوشی اور کامیابی کے اسباب تو ہو سکتے ہیں خوشی اور کامیابی نہیں ۔آپ کی کامیابی کا سب سے بڑا راز” آپ خود “ ہیں ۔ استقامت ،سخت محنت اور اللہ پر یقین سے آپ اپنی زندگی کی کہانی کا اختتام خود لکھ سکتے ہیں۔